Thursday, November 3, 2011

چوت چُدا چُدا کر پُوری بھوںسڑا بن گئی

۔ فِر میرے پاس اؤر کوئی چارا نہیں تھا سِواے اُسکی بات مانّے کے، میں نے چُپ چاپ سر ہِلا کر ہاں کہ دی ۔۔ّ۔ اُسنے کہا- واہ میری بہنا ! آج تو مجا آ جاّیگا ۔۔ّ۔ آج تک بس برا اؤر پیںٹی ہی مِلی تھی مُجھے تُمہاری آج تو پُوری کی پُوری رُوبی میرے سامنے کھڑی ہے ۔۔ّ۔ فِر اُسنے مُجھے اُسکا پایجاما نیچے کرنے کو کہا، میںنے ویسا ہی کِیا ۔۔ وو اَںڈروِیر نہیں پہنا تھا ۔۔ میں اُسکے لںڈ سے پہلے ہی رُک گئی ۔۔ اِسپر وو چِلّا کر بولا ۔۔ سالی رُک کیُوں گئی ۔۔ تیرے باس کا لںڈ بہُت پسںد ہے تُجھے ۔۔ میرا لںڈ نہیں لیگی کیا ۔۔ چل اُتر جلدی سے پایجاما میرا ۔۔ فِر میںنے اُسکا پُورا پایجاما اُتار دِیا اَب وو پُورا نںگا لیٹا تھا مُجھے اُسے دیکھنے میں شرم آ رہی تھی۔

۔۔ پر اُسکا تنا ہُآ لںڈ دیکھ کر میں بھی تھوڈی گرم ہو گئی تھی ۔۔ ویسے تو اُسکا لنڈ میرے باس کے لنڈ سے کم لںبا اؤر موٹا تھا ۔۔۔ اُسنے مُجھسے کہا جلدی سے چُوسنا
فِر میںنے کہا تُجھسے نہیں میرے باس آ رہے ہے نا ! تو ۔۔۔ فِر بِنا کُچھ کہے میں اُسکا لنڈ چُوسنے لگی ۔۔ وو میرے سِر کو پکڑ کر جور جور سے لنڈ میں دھکّا دینے لگا ۔۔ ایک ترہ سے وو میرا مُںہ چودنے لگا ۔۔۔ ۔۔۔ میں بہُت گرم ہو چُکی تھی ۔۔۔ میرا مُںہ پُوری ترہ سے چِپچِپا ہو گیا تھا اُسکے پتلے رس سے۔ّفِر تھوڑی دیر باد اُسنے مُجھے نیچے لِٹا لِیا اؤر میرے ستنوں سے کھیلنے لگا۔ وو اُنہیں جور جور سے دبانے لگا۔ مُجھے درد ہو رہا تھا مگر مزا بھی بہُت آ رہا تھا۔ یہ سوچ کر جیادا مزا آنے لگا کِ میرا سگا بھائی مُجھے چودنے والا ہے۔۔

واऽऽऽ ! اَب بھائی میرے دونوں ستنوں کو باری باری چُوسنے لگا۔ وو میرے چُوچکوں کو جور سے کاٹنے لگا۔۔ درد سے میں کراہنے لگی، بیچ بیچ میں میں چِلّا بھی پڑتی تھی مگر اُسے کُچھ فرک نہیں پڑ رہا تھا۔ اُسنے تو آج اَپنی بہن کی چُوت فاڑنے کا سوچ ہی لِیا تھا ۔۔ّ۔ّوو میرے نِپّل چبانے لگا، میں مدہوش ہو چُکی تھی پُوری ترہ۔۔ میرے مُںہ سے گںدے شبد جو کِ میں مدہوش ہونے کے باد بولتی ہُوں اَپنے باس کے ساتھ ۔۔ نِکلنے لگے بھائی کے بھی سامنے !۔۔۔ میںنے کہنا شُرُو کِیا ۔۔ آہ اَب چودو نا راہُل ۔۔۔ چود دو مُجھے ۔۔ اَپنی بہن کی پیاس بُجھاّو ۔۔ چودو ۔۔ پھاڑ ڈالو میری چُوت ۔۔۔

فِر وو دھیرے دھیرے نیچے گیا ۔۔ اؤر میری چُوت چاٹنے لگا اُسکی یے اَدا مُجھے بہُت پسںد آئی کیُوںکِ میرے باس نے اَپنا لنڈ مُجھسے بہُت بار چُسوایا تھا مگر میری چُوت چاٹنے سے منا کرتے تھے ۔۔ وو بِلکُل کُتّے کِ ترہ پُوری جیبھ باہر نِکال کر میری چُوت چاٹنے لگا ۔۔ وو جیبھ کو چُوت کے اَںدر باہر کرنے لگا ۔۔ مُجھسے اَب رہا نہیں جا رہا تھا ۔۔۔ میںنے کہا پلیز راہُل مُجھے اَب لنڈ چاہِئے تُمہارا ۔۔۔ اَپنا لنڈ ڈالو میری بُر میں ۔۔ اُسنے کہا بُر تو تیری میں جرُر چودُوںگا پہلے باکِ سب کا بھی تو مجا لے لُوں ۔۔

فِر اُسنے مُجھے پلٹ دِیا اؤر پیٹ کے بل لِٹا دِیا ۔۔ اَب اُسکے سامنے میری گاںڈ تھی۔۔ وو میری دونوں چُوتڈوں کو مسل رہا تھا اؤر میں اِتنی اُتّیجِت تھی کِ اَپنی اُوںگلی اَپنی چُوت میں ڈالے جا رہی تھی ۔۔ّ۔فِر اُسنے میرے چُوتڈوں کو چاٹنا شُرُو کِیا ۔۔۔ کسم سے میںنے بہُت بار چُدوایا بہُت بار ! ہاے ! مگر اِتنا مجا مُجھے پہلی بار آ رہا تھا وو بھی میرے بھائی سے ۔۔۔ میں آہ آہ آ اؤچ ۔۔۔ کی آواجیں نِکالے جا رہی تھی ۔۔ وو پُورا مست ہوکر میری گاںڈ چاٹتا جا رہا تھا ۔۔۔ فِر اُسنے میری گاںڈ میں اَپنی اُوںگلی ڈالی ۔۔ میں چِہُںک اُٹھی ۔۔ میںنے کہا کیا کر رہے ہو راہُل ۔۔۔ گاںڈ مروگے کیا میری ؟ ! ؟ !۔۔۔ اُسنے کہا - رُوبی ! آج تو تیرے شریر کے ہر چھید میں اَپنا لنڈ ڈالُوںگا میں ۔۔۔ تُجھے چود چود کے نِڈھال کر دُوںگا ۔۔ّ۔ میں کھُشی سے پاگل ہو رہی تھی ۔۔۔

فِر تھوڈی دیر باد اُسنے مُجھے اُٹھایا اؤر اَپنی جاںگھوں پر بیٹھا دِیا وو لیتا ہُآ تھا میں اُسکی جاںگھوں پر بیٹھی تھی وو میرے بُوبس دبا رہا تھا ۔۔ فِر اُسنے کہا - اَب میرا لنڈ پکڑ کر خُد اَپنی بُر میں ڈالو ۔۔ میںنے ویسا ہی کِیا ۔۔۔ میری بُر سے بہُت پانی نِکل چُکا تھا اِس وجہ سے میری بُر پُوری گیلی تھی اؤر اُسکا لنڈ بھی ۔۔۔ میںنے اُسکا سُپاڑا اَپنی بُر پے رکھا اؤر فِر دھیرے دھیرے اُسپے بیٹھ گئی جِسّے کی اُسکا پُورا لنڈ میری بُر میں گھُس گیا ۔۔ اَب مُجھے بہُت مجا آ رہا تھا ۔۔ فِر میں خُد اُوپر نیچے کرنے لگی ۔۔ مُجھے ایسا لگ رہا تھا کی راہُل مُجھے نہیں میں راہُل کو چود رہی ہُوں ۔۔۔ میںنے ہِلنا تیج کِیا ۔۔۔ وو بھی نیچے سے اَپنی گاںڈ اُچھال اُچھال کر مُجھے چود رہا تھا۔

تھوڈی دیر تک اِس پوسِشن میں چودنے کے باد اُسنے کہا - اَب تُم نیچے آاو ۔۔۔ میں بیڈ پے لیٹ گئی ۔۔ وو میرے اُوپر آ گیا اؤر میری دونوں ٹاںگوں کو اَپنے کںدھے پے رکھ دِیا اِسّے میری بُر اُسے ساپھ ساپھ دِکھائی دے رہی تھی۔۔ ۔۔ّفِر اُسنے میری بُر پے اَپنا لنڈ لگایا اؤر ایک ہی جھٹکے میں جور سے پُورا اَںدر ڈال دِیا ۔۔۔ میں لگاتار سیتکار کر رہی تھی آہ ۔۔اُوںہ ہہہ ہ ۔اوہ ہ ہہ کم ऑن راہُل ۔۔۔ پھک می ۔۔۔ چودو ۔۔۔ آہ ہ ہہ ہہہ ۔۔ اؤر جور سے چودو ۔۔۔ اَ آ آیا اَہ ہہ ہہ ۔۔ّ۔۔

اُسکی سپیڈ بڈھتی جا رہی تھی اَب مُجھسے کںٹرول نہیں ہو رہا تھا اؤر میری بُر سے سر سر کرتا ہُآ سارا پانی باہر آ گیا ۔۔ّ۔ راہُل رُکنے کا نام نہیں لے رہا تھا ۔۔۔ میری بُر کے پانی کی وجہ سے اُسکے ہر دھکّے سے کمرے میں پھتچ پھچ کی آواز آنے لگی ۔۔ وو میری بُر پیلتا ہی جا رہا تھا ۔۔۔ میں بھی اُسکا ساتھ دے رہی تھی ۔۔ میں اُسکے دونوں چُوتڑوں کو پکڑ کر دھکّے لگا رہی تھی اَپنی ترف۔ ۔۔۔

فِر میںنے اُسے کہا - راہُل اَپنا رس اَںدر مت گِرانا، نہیں تو تُم ماما اؤر پاپا دونوں بن جاّوگے اِس پے وو ہںس پڑا اؤر اَپنی سپیڈ اؤر بڑھا دی ۔۔ّ۔ اَب وو گِرنے والا تھا

۔۔۔ وو میری بُر، جو کِ چُدا چُدا کر پُوری بھوںسڑا بن گئی تھی، اُسّے لںڈ باہر نِکالا اؤر مُجھسے کہا کِ اَپنے دونوں بُوبس کو سائیڈ سے دبا کر رکھنے کو۔ فِر میرے دونوں بُوبس کے بیچ اُسنے اَپنا لںڈ ڈال کر میری پیلائی شُرُو کر دی تھوڈی دیر ایسے ہی وو مُجھے پیلتا رہا اُسکے باد اُسکے لںڈ سے پھچ پھچا کر سارا رس نِکل گیا جو کِ میرے پُورے مُںہ میں اؤر چُوچِیوں پے گِرا۔ّ۔ میں اَپنی جیبھ سے اؤر ہوٹھوں سے اُسکا رس چاٹ رہی تھی ۔۔ّ۔ّ۔۔

فِر اُسنے اَپنا لںڈ ہی میرے مُںہ میں دے دِیا میںنے اُسکا لںڈ تھوڑی دیر چُوسا ۔۔۔ مُجھے ایسا لگنے لگا کِ وو فِر سے اُتّیجِت ہو رہا ہے ۔۔۔ کیُوںکِ وو مُںہ کے ہی اَںدر دھکّے لگانے لگا ۔۔۔ اِتنے میں درواجے کی گھںٹی بجی ۔۔ ٹِںگ ٹوںگ !۔۔ّ۔ وو اُٹھ گیا میں بھی اُٹھ گئی وو بولا میں دیکھ کر آتا ہُوں ۔۔ اُسنے بِنا درواجا کھولے آئی-ہول سے دیکھا تو میرے باس باہر کھڑے تھے ۔۔۔ وو سمجھ گیا کی یے بھی یہاں رُوبی کو پیلنے آئے ہیں ۔۔۔ فِر اُسنے آکر مُجھ سے کہا- تیرے باس ہیں ۔۔ّ۔ ۔۔۔ ۔۔۔

فِر آگے کیسے میرے باس نے مُجھے چودا اؤر راہُل نے کیسے اُنکا ساتھ دِیا ۔۔۔ کیسے میرا اَگلی ترکّی ہُئی اَگلے مہینے میں اؤر راہُل نے کیسے میری بُر کا سؤدا کر کے ترکّی لی پڑھِیے اَگلے ہِسّے میں ۔۔۔

By Taha Gondal with No comments

0 comments:

Post a Comment

EMail : PkMasti@aol.com
Yahoo : Jan3y.J4na@yahoo.com