Thursday, November 3, 2011

گانڈ کی سیل توڑی

میں گورا، چِکنا، بڑی-بڑی گول-مول گانڈ ! اَبھی میرے شریر میں بال نہیں آئے، چِکنا چُپڑا بدن ہے میرا، میری چال بھی لڑکِیوں جیسی ہے۔ میرے کُچھ سینِیر لڑکوں نے مُجھ سے کھالی کلاسرُوم میں کھالی سمے میں اَپنے لؤڑوں کی مُٹھ مروائی، ایک دو بار میںنے اُنکے لنڈ بھی چُوسے۔

اَکیلا گھر میں ہوتا تو بہن کی اَلماری سے اُسکے برا، پیںٹی، ٹاپ پہن شیشے میں دیکھتا رہتا۔ ایک روز اُسکی اَلماری میں میںنے ایک ویسک-پترِکا دیکھی جِسمیں لڑکے کو لڑکے سے گاںڈ مرواتے دیکھا اؤر لڑکی کو لڑکی کے ساتھ کرتے دیکھ میرا دِل بھی گاںڈ مروانے کو کرنے لگا۔

ایک دِن شام کو سب بیٹھ چاے وگیرا پی رہے تھے کِ تبھی گاںو سے فون آیا میرے پاپا کے چچیرے بھائی یانِ میرے چاچا کا دیہاںت ہو گیا۔ میرے پیپر نزدیک تھے، میں اؤر دادی رُک گئے، اؤر سبھی گاںو چلے گئے، ساتھ والے اَںکل کو رات ہمارے گھر رہنے کو کہ گئے۔

اَںکل بہُت ٹھرکی تھے، یہ سبھی لوگ بتاتے ہیں۔ وو اَکیلے گھر رہتے تھے پیچھے سے وو تو کاموالی کو نہیں چھوڑتے۔ میںنے اؤر دادی نے کھانا وگیرا کھایا۔ میں برش کرنے کی سوچ رہا تھا کِ اَںکل نے بیل بجائی۔ اُنکو اَندر آنے کو کہ میں گیٹ لاک کرکے اُنکے پیچھے ہی اَندر گیا۔ میںنے اَںکل کو کہا- آپ لابی والا کمرا لے لو، میںنے بِستر لگا دِیا ہے۔

کہ میں اَپنے کمرے میں گیا۔ گرمی کی وجہ سے میںنے نِکر پہن لی اؤر سوچا کِ سونے سے پہلے نہا لُوں۔ پسینا آیا تھا، اَچّھی نیںد آیّگی۔

دروازا کھُلا ہی چھوڑ میںنے کپڑے اُتار ڈالے، سِرف چڈّی پہنے شاور کے نیچے کھڑا نہانے لگا۔ پانی سے میری چڈّی گاںڈ سے چِپک گئی۔ تبھی پیچھے سے کِسی نے میری دونوں گاںڈ کے چُوتڑوں کو سہلا ڈالا، پیچھے سے جپھپھی ڈال لی۔

میںنے مُڑ کر دیکھا تو اَںکل مُجھے باںہوں میں لیکر پیچھے میرے ساتھ چِپکے ہُئے تھے۔

یہ کیا کر رہے ہو اَںکل ؟

تیرے ساتھ نہانے کا من ہے، شاور ایک ہی ہے، اِسلِئے سوچا کِ تُجھسے چِپک نہا لُوں ! ویسے تُو بہُت چِکنا ہے، گاںڈ بہُت سیکسی ہے، ایسے چُوتڑ تو کِسی لڑکی کے بھی ن ہوںگے۔ مُجھے اَپنی ترف گھُما کے میری چھاتی دیکھ بولے- یار ! یہ تو لڑکی کی ترہ پولی پولی ہے اؤر سالے یہ نِپل تو لڑکِیوں جیسے ہیں۔

کہتے ہی پانی سے بھیگے میرے نِپل کو چُوسنا چالُو کِیا۔ میری گاںڈ میں کُچھ کُچھ ہونے لگا، مُجھ سے رُکا نہیں گیا۔ جب اَںکل مُجھے گرم کر رہے تھے تو میرا ہاتھ بھی اُنکے لںڈ پے گیا، میں سہلانے لگا۔

اَںکل بولے- مسل تھوڑا !

مُجھے نیچے کر میرے مُںہ میں لںڈ ڈال دِیا۔ گیلا لںڈ، گیلا بدن وو میرے سر کو پکڑ آگے پیچھے کرنے لگے۔ شاور بںد کر میںنے اُنکے بدن پر سابُن لگتے ہُئے اُنکی چڈّی اُتار ڈالی، لںڈ پے سابُن لگا دِیا اؤر خُد اُنکے شریر سے اَپنے بدن کو رگڑ کر سابُن لگوا لِیا۔ وو گاںڈ میں اُوںگلی کرنے لگے، سابُن کی وجہ سے اُنکی دو اُوںگلِیاں کب گھُس گئی مالُوم ن پڑا۔

شاور میں سابُن اُتار اَںکل تؤلِئے سے پوںچھ مُجھے بِستر پے لے آئے اؤر بولے- لںڈ چُوس ! مُٹھ مار !

میری دونوں ٹاںگے کںدھوں پے رکھ لںڈ میری گاںڈ پے رگڑتے ہُئے دھکّا مارا، پھٹ سے لںڈ گھُس گیا میری گانڈ میں۔ اَںکل نے مُجھے مجبُوتی سے پکڑ رکھا تھا۔ مُجھے مالُوم تھا کِ شُرُو میں درد ہوگا، میںنے اَپنے ہاتھ سے اَپنا مُںہ بںد کر رکھا تھا۔ دُوسرے دھکّے میں اُنکا آدھا لںڈ گھُس گیا، میں چھٹپٹانے لگا درد سے، ٹیس نِکل رہی تھی کِ تیسرے دھکّے سے لںڈ پُورا گھُس گیا۔

لنڈ میری گانڈ میں پھںس چُکا تھا، اَںکل نے نِکال کے فِر ڈالا، تین چار بار جب نِکال کے ڈالا تو مُجھے مجا آنے لگا اؤر اُنہوںنے مُجھے چھوڑ دِیا۔ اَب میں نیچے سے گاںڈ اُٹھا اُٹھا اُٹھا کے چُدوانے لگا۔

اَںکل نے مُجھے رات میں تین بار چودا۔ سُبہ مُجھسے ٹھیک سے چلا نہیں گیا، گاںڈ پے سرسوں کا تیل لگایا فِر ٹھیک ہُآ۔

میں سکُول گیا۔ شام کو پاپا اؤر اَنے لوگ ن لؤٹے تو اَںکل کو فِر رُکنا تھا۔ دو رات میں اَںکل نے مُجھے گاںڈُو بنا ڈالا۔ اُسکے باد مؤکا مِلتے میں جھٹ سے اُنکے گھر چلا جاتا، کھُوب چُدواتا، مؤکا روز ہی مِل جاتا۔

اَںکل نے مُجھے اِتنا چودا کِ مُجھے اُسکے باد گاںڈ مروانے کا چسکا لگ گیا۔ آںٹی کے دُنِیا سے جانے کے باد ہی اَںکل کو یہ سب کرنا پڑا تھا۔

دوستو یہ تھی میری گاںڈ میں گھُسے پہلے لںڈ کی ٹھُکائی !

میری گاںڈ میں دُوسرا لںڈ کِسکا گھُسا وو اَگلی بار لِکھُوںگا !

کبھی اَلوِدا ن کہنا !

چلتے چلتے کوئی لںڈ مِل جائے تو اُسے گاںڈ میں ڈلوانا۔

By Taha Gondal with No comments

0 comments:

Post a Comment

EMail : PkMasti@aol.com
Yahoo : Jan3y.J4na@yahoo.com