Monday, January 16, 2012

لوڑے کو تیل مالش کرکے گانڈ پھاڑی

ھیلو دوستو میرا نام ندیم ھے اور میرا تعلق لاھور سے ھے۔ آج میں آپ سب لڑکوں اور لڑکیوں کو اپنی پہلی کہانی سنانے جا رہا ھوں۔جو کہ میری زندگی کی ایک یادگار کہانی ھے۔تو شروع کرتے ھیں۔

مجھے ایک عادت ھے کہ میں اکثر اوقات مالشیوں سے اپنا جسم دبوایا کرتا ھوں اور کبھی کبھی مالش بھی کروا لیا کرتا ھوں۔ ایک دفعہ مجھے باغ میں ایک 16،15 سال کا مالشیا مل گیا۔ میں نے باغ میں ہی اس سے اپنا جسم دبوانا شروع کر دیا۔میں نے اس سے کہا کہ یار تھکاوٹ بہت ھو رہی ھے زرا جم کر دبانا۔تو اس نے کہا کہ آپ جسم دبوانے کے بعد ھوٹل کے کمرے میں مالش بھی کروا لو تو میں آپ کی تھکاوٹ اچھی طرح اتار دوں گا۔میں نے کہا چلو ٹھیک ھے۔مین اہنا جسم دبوانے کے بعد اس کے ساتھ ایک قریبی ھوٹل کی طرف چل پڑا۔

ھوٹل کے کمرے میں پہنچ کر اس نے کہا۔آپ چادر باندھ لو اور کپڑے اتار دومیںنے چادر باندھی اور کپڑے اتار کر چارپائ پر لیٹ گیااس نے میری پنڈلیوں سے مالش شروع کر دی۔آہستہ آہستہ اسے پسینہ آنا شروع ھو گیا۔تو میںنے اس سے کہا کہ تم اپنی کمیض اتارر دو۔تیل سے خراب ھو جائگی۔مجھے اس کہ ہاتھوں سے ہی نشہ سا ھو رہا تھا۔اب اس کا جوان ھوتا ھوا گورا جسم دیکھ کر نشہ دوبالا ھونے لگا۔

میں نے اس سے اس کا نام پوچھا جو اس نے عتیق بتایا۔اب وہ چادر سرکا کہ میری رانوں پر مالش کر رہا تھا۔اس کے ہاتھوں کے لمس سے میری آنکھیں بند ھوئ جا رہیں تھیں۔اور میرا لوڑا تن کر پرن مینار کا منظر پیش کر رہا تھا۔اورمیرے لوڑے کی جگہ چادر کا ٹینٹ سا بن گیا تھا۔ وہ میری کیفیت بھانپ گیا۔ اور آہستہ آہستہ چادر کے نیچے میرے لوڑے کے آس پاس مالش کرنے لگا۔پھر اس نے چادر میرے لوڑے پر سے ھٹا دی اور پوچھا کیا اس کی بھی مالش کر دوں۔تو میں نے کہا ھاں یار اس کی بھی مالش کر دو پر بڑے پیار سے۔ مگر پہلے تم اپنی شلوار بھی اتار دو۔اس نے جھٹ سے اپنی شلوار اتاری اور ساتھ میں میری چادر بھی نکال کر سائیڈ پر رکھ دی

پھر وہ میری ٹانگوں کے درمیان بیٹھ کرمیرے لوڑے پر تیل ڈال کر اس کی بڑے پیار سے مالش کرنے لگا۔تھوڑی دیر بعد میںنے اس سے کہا کہ ٹھرو یار ایسے مزا نہیں آ رہا۔تم ایسا کرو میرے ساتھ لیٹ جاؤ۔اس نے کہا کہ میں اس کہ علیحدہ سے پیسے لوں گا۔میں نے کہا کتنے۔اس نے کہا دو سو ۔میں نے کہا کہ میں تمھیں تین سو دوں گا پر تم کسی بات سے انکار نہیں کرو گے۔اس نے کہا کہ ٹھیک ھے۔پھر وہ میرے ساتھ لیٹ گیا۔

میںنے اس کو اپنے ساتھ لپٹا لیا اور اس کے گلابی کسے ھوے ھونٹوں پر اپنے ھونٹ رکھ دئے اور دیوانوں کی طرح اس کے ھونٹوں کو چوسنے لگا۔اب پوزیشن یہ تھی کہ ہم دونوں سائیڈ بائی سائیڈ لیٹے تھے میری ایک ٹانگ اس کی دونوں ٹانگوں کے درمیان تھی اور اس کی ایک ٹانگ میرے کولھے کے اوپر سے ھوتی ھؤی میری گانڈ کے پیچھے اور ہم دونوں کے ھونٹ جڑے ھوئے۔۔۔۔۔۔۔آہ کیا پوزیشن تھی۔وہ اب میری زبان کو اپنے منہ میں لے کر چوس رہا تھا 10 منٹ تک ہم ایسے ہی ایک دوسرے کی زبان چوستے رھے اور میرا لوڑا اس کے لوڑے سے کھیلتا رہا

پھر اچانک اس نے مجھے سیدھا کیا اور میرے اوپر آ کر میرے گالوں گردن پر سے کس کرتا ھوا اور چومتا ھوا میری چھاتی پر آ گیا اور میرے پستانوں کو منہ میں لے کر چوسنے لگا۔ مجھے ایسا لگ رہا تھا کہ جیسے میں ھواؤں میں اڑ رہا ھوں۔ پھر وہ میرے پیٹ پر سے زبان پھیرتا ھوا میری رانوں کے جوڑوں کو باری باری چاٹنے لگا۔

آہ کیا مزا تھا۔میں بتا نہیں سکتا۔پھر وہ میرے ٹٹوں کو چوستا ھوا میرے لوڑے کی جڑ سے اپنی زبان چلاتا ھوا میرے ٹوپے پر پہنچا اور اس کو چوم کر پیچھے ھو گیا۔میں بہت زور سے تڑپا۔ میں نے کہا یہ کیا تو اس نے کہا۔اب آپ بھی ایسے ہی کرو۔پھر وہ میری سائیڈ میں سیدھا لیٹ گیا۔میں نے اس کے اوپر آ کر اس کے ھونٹوں پر اپنے ھونٹ رکھ کر چوسنے لگا۔پھر میں اس کے گالوں کو چاٹتا ھوا اور اس کی گردن پر زبان پھیرتا ھوا اس کے پستانوں پر پہنچ گیا پانچ منٹ تک اس کے پستانوں کہ باری باری چوسنے کے بعد میں نے اس کے یاتھ اس کی رانوں سے جوڑ دیئے اور اس کی چھاتی اور بغلوں کی درمیانی جگہ زبان گھسا کر چاٹنے لگا۔اس کو جیسے کرنٹ سا لگا۔میںنے پوچھا کیا ھوا کیا مزا نہیں آیا۔اس نے کہا بہت مزا آیا۔آپ دوبارا کرو۔

پھر میں نے اس کی چھاتی اور بازو کے درمیان بنی پھودی جیسی جگہ کو دس منٹ تک چاٹتا رہا۔ اس کے بعد میں اس کے پیٹ پر سے زبان پھیرتا ھوا اس کے رانوں کے جوڑوں پر پہنچ گیا۔اس کے گلابی لوڑا پانچ انچ کا بہت ہی خوبصورت لگ رہا تھا۔اس کے لوڑے کے اوپر والی جگہ پر ایک بھی بال نہیں تھا۔ میں اپنی زبان سے اس کے لوڑے کے اوپر والی جگہ اور اس کے رانوں کے جوڑوں کو چاٹتا رہا۔ پھر میں نے اس کے ٹٹے منہ میں لے کر چوسے اور اس کے لوڑے کی جڑ سے لے کر ٹوپے تک زبان پھیرنا شروع کر دی۔

پھر میں نے اس کے پورے لوڑے کو ایک دفعہ منہ میں ڈالا اور پیچھے ھو گیا۔اس نے میری آنکھوں میں دیکھا۔تو میں اس کے سر کے پاس گھوٹنوں کے بل جا کھڑا ھوا۔ اور اپنا لوڑا اس کے ھونٹوں کے پاس کر دیا۔اس نے سیدھے لیٹے لیٹے سر سائیڈ پر کیا اور میرا لوڑا منہ میں لے کر چوسنے لگا۔وہ سین مجھے اتنا اچھا لگ رہا تھا کہ دل کر رہا تھا کے اس کی فوٹو اتار لوں۔پھر تھوڑی دیر بعد سائیڈ کے بل کیا اور خود بھی اس کے سامنے سائیڈ کے بل اس طرح لیٹ گیا کہ اس کا سر میرے لوڑے کے پاس اور میرا سر اس کے لوڑے کے پاس ھو گیا۔اور ہم دونوں نے ایک دوسرے کے لوڑے چوسنے شروع کر دئیے۔

تھوڑی دیر بعد وہ میرے منہ میں ہی چھوٹ گیا۔اور میں نے اس کی ساری منی پی لی۔کچھ دیر بعد میں بھی چھوٹ گیا۔میں نے اس سر اپنے گھٹنوں میں دبا لیا جس کی وجہ سے اسے مجبورا میری منی پینی پڑی۔

پھر میں نے سیدھا ھو کر اس کو خود سے لپٹا لیااور اس سے پوچھا کہ مزا آیا۔تو اس نے بہت کہ کر اپنے ھونٹ میرے ھونٹوں پر رکھ دئیے اوراپنی زبان میرے منہ میں ڈال دی۔میں نے اپنی منی کا زائقہ چکھنے کے بعد اس کی زبان کو زور زور سے چوسنے لگا۔تھوڑی دیر بعد وہ اٹھا اور مجھے سیدھا لٹا کر میری ٹانگیں کھول کر میرے سوئے ھوے لوڑے کو چاٹتا ھوا میرے ٹٹے چوسنے لگا۔ پھر اس نے ایک کشن میری کمر کے نیچے رکھا اور میری ٹانگیں اٹھا کر میری گانڈ چاٹنے لگا۔ آہ کیا مزا تھا۔

میں نے اس کو سیدھا لٹایا۔اور اس کےمنہ پر اپنی گانڈ رکھ دی۔وہ تھوڑی دیر میری گانڈ چاٹتا رہا۔پھر میں نے اس کو ڈوگی سٹائل میں کر کے اس کے چوتڑ کھولے اور اس کی گانڈ کو بھوکوں کی طرح چاٹنے لگا۔پھر میں نے اپنی بڑی انگلی کو تھوک لگا کر اس کی گانڈ میں اندر باہر کرنے لگا۔جب اس کی گانڈ تھوڑی کھل گئی تو میں نے اپنی دوسری انگلی بھی اس کی گانڈ میں گھسا دی۔اس کے منہ سےسسکاریاں نکلنے لگیں۔آآہ ہ ہ ہ ہ ہ ہ اوف ف ف ف ۔آرام سے کرو درد ھو رھا ھے۔ اوہ ہ ہ ہ ہ ہ۔جب میری دونوں انگلیاں اس کی گانڈ رواں ھو گئیں تو میں نے اچانک اپنی انگلیاں نکال کر اور دونوں ھاتھوں سے اس گانڈ کھول کر اپنی زبان اس کی گانڈ میں گھسا دی۔وہ اور زور زور سے سسکاریاں لینے لگا۔

میں نے اس سے پوچھا کہ کیا ھوا۔اس مے کہا آہ بہت مزہ آ رہا ھے۔تم اپنی زبان اندر باہر کرو۔میں نے اپنی زبان سے اس کو چودنا شروع کر دیا۔واہ یہ تو پھودی چاٹنے سے بھی سے زیادہ مزہ آ رہا تھا۔تھوری دیر بعد میں نے اس کے منہ میں اپنا لوڑا دے کر اس سے تھوک لگوایا اور اس کی گانڈ کے پیچھے آ کر(ڈوگی سٹائل میں ہی)اس کی گانڈ کی موری پر اپنا ٹوپا رکھ کر اندر گھسانے کی کوشش کرنے لگا۔اس نے کہا کہ تم ایسا کرو کہ اپنے لوڑے پر بھی تیل لگائو اور میری گانڈ پر بھی تیل لگایو۔میں نے اپنے لوڑے کی تیل سے اچھی طرح مالش کی پھر پلاسٹک کی تیل کی شیشی کو اس گانڈ کی موری کے اندر کر کے پیچھے سے شیشی دبا دی۔جس سے کافی سارا تیل اس کی گانڈ میں چلا گیا۔

پھر میں نے اس سے کہا کہ اپنی گانڈ دونوں ہاتھوں سے کھولو۔پھر میں نے اس کی کمر ایک ہاتھ سے دبائی اور دوسرے ہاتھ سے اپنا ٹوپا اس کی گانڈ کی موری پر رکھ کر تھوڑا سا زور لگایا تو (پڑچ) کی آواز کے ساتھ میرا ٹوپا اس کی گانڈ میں گھس گیا۔اس نے بری میٹھی سی سسکاری لی۔میں نے پوچھا مزہ آیا کیا۔وہ بولا کہ بہت اب تم ایسا کرو کہ اپنا ٹوپا میری گانڈ میں ہی رہنے دو اور اپنے باقی لوڑے پر ڈھیر سارا تیل لگا کر ایک ہی جھٹکے میں ہورا اندر گھسا دو۔ میں بیت حیران ھوا اور اس سے پوچھا کہ اس طرح تو تم کو بہت درد ھو گا۔ وہ بولا کہ تم تیسرے آدمی ھو جو میری گانڈ مار رھے ھو سب سے میرے اس دوست نے میری گانڈ ماری جو مجھے گائوں سے یہاں لایا تھا اس نے مجھے بتایا کہ یہاں پر روپے کمانے ھیں تو ایسے ہی گانڈ مروانی پڑے گی۔

دوسری بار میں نے ایک گاہک سے گانڈ مروائی جس نے بس میری گانڈ ہی ماری۔نا مجھے پیار کیا اور نا ہی مجھے کوئی مزہ آیا۔میں نے یہاں دوسرے لڑکوں سے سنا ھے کہ یہاں پٹھان اور کئی دوسرے گاہکوں کے لوڑے اتنے لمبے اور موٹے ھوتے ھیں جس طرح کہ آپکا ھے۔ وہ ایک ہی جھٹکے میں گانڈ پھاڑ دیتے ھیں۔اور ذرا ترس نہیں کھاتے۔ تم مجھے اتنا پیار کر رھے ھو اور اتنا مزہ دے رھے ھو۔ تو میں نے سوچا کے کیوں نہ تم سے ہی اپنی گانڈ کھلی کروائوں۔اس لییے کہا تھا کہ ایک ہی جھٹکے میں پورا اندر ڈال دو۔

اس کا سر چارپائی سے لگا ھوا تھا اور اس نے گھٹنوں کے بل اپنی گانڈ اوپر اٹھا کر دونوں ہاتھوں سے کھول رکھی تھی اور میرا ٹوپا اس کی گانڈ مین گھسا ھوا تھا۔میں نے اپنے باقی لوڑے کو ڈھیر سا تیل لگایا اور اس کے شولڈرز کو پکڑ کر ایک زور دار گھسا مارا۔جس سے میرا پورا لوڑا تو اندر چلا گیا پر اس نے زور سے اپنی ٹانگیں سیدھی کیں اور چارپائی پر سیدھا گر کر لیٹ گیا۔اس مے بمشکل اپنی چیخ روکی۔میںنے چونکہ اس کو شولڈرز سے پکڑ رکھا تھا اس لییے میں بھی اس کے ساتھ ہی اس کے اوپر سیدھا لیٹ گیا۔ وہ زور زور سے کراہ رہا تھا۔میں نے اس کا سر موڑ کر اس کے ھونٹوں پر اپنے ھونٹ رکھ کر انہیں چوسنے لگا۔مجھے ایسا لگ رہا تھا کہ جیسے میں کوئی خواب دیکھ رہا ھوں۔میں اس کے اوپر لیٹا ھوا تھا اور میرا لوڑا اس کی تنگ گانڈ میں بری طرح سے جکڑا ھوا تھا ۔جس سے مجھے بہت مزہ آ رہا تھا۔میرے تھوڑی دیر اس کے چتڑ سہلانے اور کسنگ کرنے سے اس کا درد کچھہ کم ھو گیا۔تو وہ بولا آہ تمھارا لوڑا میری چھوٹی سی گانڈ میں پورا گھسا ھوا ھے۔ کیا تم کو مزہ بھی آ رہا ھے کہ نہیں. میں نے اس کے گالوں کو چومتے ھئوے کہا کہ جانو مجھے آج سے ذیادہ مزہ کبھی بھی نہیں آیا۔

پھر میں آہستہ آہستہ اپنی گانڈ کو ہلا ہلا کر اپنا لوڑا اس کی گانڈ میں اندر باہر کرنے لگا۔تھوڑی دیر بعد اس نے کہا۔کہ زور زور سے میری گانڈ مارو اور اپنا پورا لوڑا باہر نکال کر بار بار میری گانڈ میں ڈالو۔مجھے بھی جوش آ گیا اور میں زور زور سے اس کی گانڈ مارنے لگا۔پر اس طرح میرا پورا لوڑا اندر باہر نہیں ھو رہا تھا۔میں اس کو سیدھا کرنے کے لییے پیچھے ھوا تو میںنے دیکھا کہ اس کی گانڈ سے کافی خون نکل کر گدے میں جذب ھہ چکا ھے۔چونکہ میں نے چادر پہلے ہی باندھنے کے لییے اٹھا لی تھی۔اس لییے وہ بچ گئی تھی۔میں نے جیب سے رومال نکال کر اپنا لوڑا اور اس کی گانڈ صاف کی۔پھر گدے کو الٹا کر اس کو چارپائی پر سیدھا لٹایا اور اس کی کمر کے نیچے موٹا سا کشن رکھ دیا۔پھر میں نے اپنے لوڑے اور اس کی گانڈ پرتیل لگایا۔اور اس کی ٹانگیں اتھا کر اپنے بازئووں پر رکھ لیں پھر میںنے اپنا ٹوہا اس اس کی گانڈ پر رکھ کر ایک زور دار جھٹکے سے اپنا پورا لوڑا اس کی گانڈ میں گھسا دیا۔

اس کو درد تہ ھوا۔ پر وہ برداشت کر گیا۔میں نے اب زور زور سے اسکی گانڈ مارنی شروع کر دی۔جب میرا لوڑا آسانی سے اندر باھر ھومے لگا تو میں نے پھر پورا لوڑا نکال کر بار بار اندر ڈ النا شروع کر دیا۔15 منٹ بعد میں اس کی گانڈ میںہی فارغ ھو کر اس کے ساتھ لیٹ گیا۔ وہ میری طرف منہ کر کہ مجھ سے لپٹ گیا۔ اور میرے گالوں اور ھونٹوں پر پیار کرنے کے بعد بولا۔کہ آج میں بہت خوش ھوں آج مجھے بہت مزہ آیا۔اب میں نے جانا ھے۔اتنی دیر ھو گئی ھے۔ھوٹل والا کہیں اوپر نا آ جائے۔میں نے کہا چلو ٹھیک ھے۔اگلی اتوار کو ھم دوبارہ ملیں گے۔اور اس سے ذیادہ مزہ کریں گے۔پھر ہم دونوں نے کپڑے پہنے اور ھوٹل سے باہر آ گئے

کیوں دوستو کیسی لگی آپ سب کو میری کہانی اگر آپ چاہتے ھیں کہ ایسی سچی کہانیاں میں اور لکھوں تو مجھے کمینٹس کر کہ میری حوصلہ افزائی کریں تاکہ مجھے پتہ چلے کہ میری کہانی کتنے لوگوں کو پسند آئی اور اور اور اگر کوئی لاھور کا لڑکا (جس کی گانڈ پر بال نا ھوں) یا لڑکی (عورت) جو کہ میرے ساتھ سیکس کرنا چاہتی ھو۔سپیشلی مجھ سے رابطہ کریں

EMail : PkMasti@aol.com
Yahoo : Jan3y.J4na@yahoo.com

By Taha Gondal with No comments

0 comments:

Post a Comment

EMail : PkMasti@aol.com
Yahoo : Jan3y.J4na@yahoo.com

    • Popular
    • Categories
    • Archives